دہشت گردی کے خطرے کے پیشِ نظر بدھ کو علی الصبح جرمن پولیس نے صوبے ہیسے میں 54 مختلف مقامات پر چھاپے مارے۔ اس کارروائی میں ایک ہزار ایک سو سے زائد پولیس اہلکاروں نے حصہ لیا۔ سلفی عقیدے کے مسلمانوں کے مراکز کے خلاف کی جانے والی اس کارروائی کے دوران تیونس سے تعلق رکھنے والے ایک چھتیس سالہ شخص کو گرفتار کر لیا گیا، جس پر شبہ ہے کہ وہ دہشت گرد تنظیم ’اسلامک اسٹیٹ‘ کے لیے نئے لوگ بھرتی کرنے میں مصروف تھا اور ایسے افراد کی تلاش میں تھا، جو جرمنی میں کوئی دہشت گردانہ حملہ کر سکیں۔

پراسیکیوٹرز کے مطابق پولیس کی تحقیقات کا ہدف مجموعی طور پر سولہ مشتبہ افراد تھے، جن کی عمریں سولہ سے لے کر چھیالیس سال تک بتائی گئی ہیں۔ گزشتہ روز جرمن پولیس نے دارالحکومت برلن میں بھی چھاپے مارے اور دہشت گردی کے شبے میں تین افراد کو گرفتار کر لیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY