بھارتی قید میں موجود پاکستان کے دو طالب علموں کا رہائی کے بعد آج وطن واپس پہنچنے کا امکان ہے۔اڑی حملہ میں معاونت کے الزام میں گرفتار کشمیری طالب علموں کے ورثا ان کےاستقبال کے لئے واہگہ بارڈر روانہ ہوگئے۔

طالب علم احسن خورشیدکی خالہ کاکہناہےکہ بچوں کی بے جا قید کے پانچ ماہ ہم سب کی زندگی کے مشکل ترین دن تھے۔

جیونیوز سےگفتگو میں خالہ نے پاکستانی اور بھارتی حکومت کا شکریہ اداکیا، جبکہ ماموں چودھری قاسم کا کہنا تھا کہ بھارت الزام لگانے سے پہلے اگر تحقیقات کر لیتا تو اتنی مشکل پیش نہ آتی

SHARE

LEAVE A REPLY