ترکی اور یورپی ممالک کے درمیان سرد جنگ شدت اختیار کرگئی

0
287

ترکی اور یورپی ممالک کے درمیان سرد جنگ شدت اختیار کرگئی۔ ترک صدر رجب طیب اردوان نے ہالینڈ پر انیس سو پچیانوے میں شہر سریبرینتسا میں مسلمانوں کے قتل عام کا الزام لگادیا۔ ترک صدر نے کہا کہ ناکامی اب بھی ہالینڈ کے اعصاب پر سوار ہے۔ ہالینڈ کی اخلاقیات ٹوٹ چکی ہے۔

دوسری جانب ہالینڈ کے وزیر اعظم مارک روٹا نے ترک صدر کے الزامات کو مسترد کردیا۔ مارک روٹا نے کہا کہ طیب اردوان جذباتی ہونے کے بجائے پر سکون رہیں۔

جرمن چانسلر دفتر کے سربراہ پیٹر الٹمائر نے ترکی کی جانب سے تازہ بیان بازی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ انقرہ جرمنی پر نازی طریقہ کار اپنانے کے الزامات سے باز رہے۔ الٹمائر نے دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ اس صورتحال میں ترک سیاستدانوں کے جرمنی میں داخلے پر پابندی بھی عائد کی جا سکتی ہے۔

ترکی کی جانب سے جرمنی، آسٹریا، سوئٹرزلینڈ اور ہالینڈ میں ریلیاں نکالنے کی کوشش کو روکا گیا تھا

SHARE

LEAVE A REPLY