ریسلرز کے درمیان مقابلہ 70 لاکھ ڈالرز کا

0
320

ریسل مینیا 33 کے انعقاد میں اب ایک ہفتے سے بھی کم وقت رہ گیا ہے اور اکثر افراد کی نظریں رومن رینز اور انڈر ٹیکر کے میچ پر مرکوز ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ یہ انڈر ٹیکر کے کیرئیر کا آخری مقابلہ بھی ہوسکتا ہے مگر اس کی ایک خاص بات جو اکثر افراد کو معلوم نہیں وہ یہ کہ یہ ڈبلیو ڈبلیو ای کی تاریخ کے مہنگے ترین میچز میں سے ایک ہوگا۔

جی ہاں رپورٹس کے مطابق دنیا بھر میں کروڑوں افراد کو پسند ان دونوں ریسلرز کے درمیان مقابلہ 70 لاکھ ڈالرز (73 کروڑ پاکستانی روپے سے زائد) کا پڑے گا۔

فوربس میگزین کی رپورٹ کے مطابق اس میچ کا نتیجہ رومن رینز کی سالانہ آمدنی میں کئی گنا اضافہ کردے گا خاص طور پر اس وقت جب جان سینا ڈبلیو ڈبلیو ای میں اب فل ٹائم ریسلر کی حیثیت چھوڑ رہے ہیں۔

اس سے رومن رینز کے لیے زیادہ آمدنی کے حصول کا دروازہ کھل جائے گا۔

گزشتہ سال جان سینا نوے لاکھ ڈالرز سے زائد کما کر سب سے زیادہ کمانے والے ریسلر قرار پائے تھے جبکہ رومن رینز کی سالانہ آمدنی بمشکل بیس لاکھ ڈالر تھی۔

مگر ریسل مینیا میں انڈر ٹیکر سے میچ خاص طور پر اگر وہ جیتنے میں کامیاب ہوتے ہیں (تمام پیشگوئیاں بھی رومن رینز کی کامیابی کی جانب اشارہ کرتی ہیں) تو وہ آسانی سے جان سینا کی آمدنی کا ریکارڈ توڑ دیں گے اور اس میچ سے 70 لاکھ ڈالرز گھر لے جائیں گے۔

ایک حالیہ انٹرویو کے دوران رومن رینز نے کہا تھا ‘ مجھے انڈرٹیکر کی عمر کے حوالے سے کوئی فکر نہیں اور ان کا مقابلہ اپنی پوری صلاحیت سے کروں گا’۔

رومن رینز نے کہا ‘ وہ ڈیڈ مین کہلاتے ہیں اور پھر آپ انڈر ٹیکر کی عمر کی بات کرتے ہیں؟ اس کی کوئی تک نہیں بنتی، وہ اسی سال کی عمر میں بھی ریسلنگ رنگ میں ایکشن میں دکھائی دے سکتے ہیں، ان کے کیرئیر اور کامیابیوں کو دیکھ کر لگتا ہے کہ وہ کچھ بھی کرسکتے ہیں، تو میں ان کی عمر کے بارے میں فکر مند نہیں

SHARE

LEAVE A REPLY