امریکہ نے شام کے ایک ہوائی اڈے کو ٹام ہاک کروز میزائلوں سے نشانہ بنایا

0
227

امریکہ کے محکمہ دفاع کے عہدیداروں نے وائس آف امریکہ کو بتایا ہے کہ امریکہ نے شام کے ایک ہوائی اڈے کو ٹام ہاک کروز میزائلوں سے نشانہ بنایا ہے۔

یہ کارروائی رواں ہفتے مبینہ طور پر صدر بشار الاسد کی فورسز کی طرف سے شامی باغیوں کے زیر قبضہ علاقے میں کیمیائی حملے کے جواب میں کی گئی، اس کیمیائی حملے میں بچوں اور خواتین سمیت لگ بھگ 100 شہری ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔

امریکہ کی طرف سے شامی فورسز کے خلاف یہ پہلی براہ راست کارروائی ہے۔

امریکہ عہدیداروں نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ مشرقی بحیرہ روم سے 59 ٹام ہاک میزائل شام کے ہوائی اڈے پر داغے گئے۔

کیمیائی حملے پر عالمی برادری نے شدید غم و غصے کا اظہار کیا تھا اور اس کی ذمہ داری صدر بشار الاسد کی حکومت اور اس کے اتحادی روس پر عائد کی تھی۔

تاہم جمعرات کو صحافیوں سے گفتگو میں شامی وزیرِ خارجہ نے روسی حکومت کے اس دعوے کو دہرایا کہ فضائی حملوں میں باغیوں کے ایک گودام کو نشانہ بنایا گیا تھا جہاں انہوں نے کیمیائی ہتھیار ذخیرہ کیے ہوئے تھے۔

روسی حکومت کے مرکز ‘کریملن’ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ روسی صدر نے شفاف تحقیقات کے بغیر بے بنیاد الزامات لگانے پر برہمی ظاہر کی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY