بھارتی جارحیت اور سبزاراحمد بھٹ کی شہادت پر مقبوضہ کشمیر میں آج بھی ہڑتال ہے۔شہید حریت رہنما سبزار احمد کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے آج ترال تک مارچ کیا جائے گا۔ جرمنی کےشہر برلن میں بھارتی وزیر اعظم مودی کی آمد پر احتجاجی مظاہرہ کیاگیا ہے۔

بھارتی جارحیت کے خلاف مقبوضہ کشمیر میں آج بھی ہڑتال کی جارہی ہے۔تمام کاروباری مراکز، دکانیں اور تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔

ہڑتا ل ہفتے کو حریت پسند برہان وانی کے جانشین سبزر احمد بٹ کی شہادت ، قابض انتظامیہ کے نہتے مظاہرین پر ظلم وستم، لاٹھی چارج اور براہ راست فائرنگ کے خلاف حریت رہنماوں کی اپیل پر کی جارہی ہے۔

شہید حریت رہنما سبزار احمد کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے آج ترال تک مارچ کیا جائے گا۔

ادھر بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی جرمن دارالحکومت برلن آمد پر پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی نے احتجاجی مظاہرہ کیا،جس میں مودی اور بھارتی فوج کے خلاف شدید نعرے لگائے گئے۔

دوسری جانب ڈائریکٹر ہیومن رائٹس واچ نے بھارتی آرمی چیف کے بیان کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیری شخص کو انسانی ڈھال بنانے والے بھارتی میجر کی حمایت کر کے بھارتی آرمی چیف نے مجرمانہ لیڈر شپ کا مظاہرہ کیا ہے۔

بھارتی آرمی چیف بپن راوت نے کشمیری شخص کو جیپ سے باندھ کر انسانی ڈھال بنانے کے عمل کو میجر گوگوئی کی جدید حکمت عملی کہا تھا

SHARE

LEAVE A REPLY