اٹھائیس جولائی 1943ء بنیتومسولینی نے استعفی دیدیا

0
241

مسولینی کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں۔ اٹلی کے فسطائی دور میں ۱۹۲۲ سے ۱۹۴۵تک مسولینی اٹلی کا مطلق العنان رہنما رہا۔ دئیے گئے اقتباسات اس کے مقالے “فسطائیت کا نظریہ” سے لئے گئے ہیں جو کہ اطالوی انسائیکلوپیڈیا کے لئے ۱۹۳۲میں لکھا گیا تھا۔ فسطائیت جنگ عظیم اول اور دوم کے درمیان یورپ پر مسلط رہنے والا ایسا سیاسی نظریہ ہے جس کی پرورش نفرت اور پروپیگنڈے سے ہوئی اور جس نے آخر کار پوری دنیا کو جنگ عظیم دوم میں دھکیل دیا۔

فسطائیت جمہوریت کی متضاد ہے۔ جمہوریت قوم کو محض اس کی اکثریت کے برابر کر دیتی ہے۔ لیکن اگرقوم کو مقدار کی بجائے معیار پر پرکھا جائے اور ایسا ہونا بھی چاہئے تو ہی جمہوریت کی خالص ترین شکل ابھرتی ہے۔ ایسے میں قوم کو ایک عظیم ترین خیال کی صورت تصور کیا جائے (یعنی اخلاقی، حقیقی اور منطقی معنوں میں عظیم ترین)۔ ایسا خیال جو چاہے ایک ذہن یا چند اذہان کی عقلِ سلیم اور خواہشات کی پیداوار ہو مگرپوری قوم کے ضمیر کی آواز بن سکے

سطائیت انسانی زندگی کی مختلف اشکال کی ہی نہیں بلکہ اس کے مندرجات؛ انسان، کردار اور ایمان کی تشکیلِ نو کرتی ہے۔ اس مقصد کے لئے ایسے نظم وضبط اور اقتتدار کی ضرورت ہے جو انسان کی روح میں داخل ہو کر وہاں بغیر کسی مزاحمت کے اس پرحکومت کرے۔

SHARE

LEAVE A REPLY