پاکستان کرکٹ بورڈ کے نو منتخب چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ انٹرنیشنل کرکٹ کی پاکستان میں بحالی میرے لئے چیلنج ہے، اسپاٹ فکسنگ پر عدم برداشت کی پالیسی جاری رہے گی ۔
پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین منتخب ہونے کے بعد لاہور میں پر یس کانفرنس سے خطاب کے دوران نجم سیٹھی کا کہناتھاکہ بحیثیت چیئر مین مجھ پر بڑی ذمہ داری ہے، بورڈ ارکان کے ساتھ مل کر چلوں گا،پاکستان سپر لیگ سے جو ٹیلنٹ آ رہا ہے اس تسلسل کو قائم رکھنے کی کوشش کروں گا۔
پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی میرے لئے چیلنج ہے، ورلڈ الیون کے دورہ پاکستان سے متعلق گرین سگنل ملا ہوا ہے، ورلڈ الیون کی پاکستان آمد کی تاریخوں پر ایک دو دن میں فیصلہ ہو جائےگا۔
ایشین کرکٹ کونسل کے اجلاس میں شرکت کےلئےکل کولمبو جاؤں گا، انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے بھی بجٹ بنایا ہے، وہ بھی گرانٹ دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے سیزن میں پاکستان کو بہت کم ٹیسٹ میچز ملے ہیں جس پر تحفظات ہیں، اسپاٹ فکسنگ پر عدم برداشت کی پالیسی جاری رہے گی۔
نجم سیٹھی کا مزید کہناتھاکہ درخواست کرتا ہوں کہ ٹیم کی ہار پر صبر کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑیں، کرکٹرز کو سپورٹ کریں، نشیب و فراز آتے رہیں گے، قومی ٹیم میں مزید نوجوان کھلاڑی آئیں گے، پاکستان سپر لیگ سے جو ٹیلنٹ سامنے آ رہا ہے اس تسلسل کو قائم رکھنے کی کوشش کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ گزشتہ بورڈ آف گورنرز کی کمیٹیاں تحلیل ہوچکی ہیں ، ایگزیکٹو کمیٹی کی اب ضرورت نہیں ہے، کمیٹی کے معاملات اب میں خود دیکھوں گا

SHARE

LEAVE A REPLY