بارسلونا میں ویگن حملہ کرنے والے مسلم مذہبی گروپ کے ایک مشتبہ رکن نے عدالت کو بتایا ہے کہ یہ گروپ دھماکا خیز مواد کے ذریعے ایک زیادہ بڑا حملہ کرنے کا منصوبہ بنا رہا تھا۔

بارسلونا حملے سے ایک روز قبل گزشتہ منگل کے روز بارسلونا کے جنوب مغرب میں واقع شہر الکانر کے ایک گھر میں ہونے والے دھماکے کے بعد زخمی حالت میں گرفتار ہونے والے محمد حولی شِملال نے یہ بیان ہسپانوی ہائیکورٹ میں دیا ہے۔

بارسلونا کے ایک مصروف مقام پر ایک ویگن لوگوں پر چڑھانے کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ مراکش سے تعلق رکھنے والے ویگن کے مبینہ ڈرائیور کو پولیس نے گزشتہ روز فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY