پنٹاگون کے جوائنٹ اسٹاف ڈائریکٹر لیفٹیننٹ جنرل کینتھ مکینزی کا کہنا ہے کہ اس وقت تقریباً 11ہزار امریکی مرد و خواتین فوجی اہلکار افغانستان میں موجود ہیں جبکہ گزشتہ سال یہ تعداد 8 ہزار 400 فوجی بتائی گئی تھی۔

ایک جامع جائزے کے مطابق 11ہزار فوجیوں میں عارضی اور اپنی شناخت پوشیدہ رکھنے والے فوجی بھی شامل ہیں جبکہ افغانستان میں مزید فوجی بھیجنے کے فیصلے پر بھی غور جاری ہے۔

ادھر وزیر دفاع جیمز میٹس کا کہنا ہے کہ تاحال فوجی دستوں کی تعیناتی کے حوالے سے کسی قسم کا کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

متعدد امریکی جنرلز کئی مہینوں سے کہہ رہے ہیں کہ افغانستان کی صورتحال امریکا کے لیے زچ کردینے والی ہے اور افغانستان میں امریکا کے جیتنے کا کوئی امکان نہیں جبکہ امریکا افغان جنگ میں اب تک اپنے ایک کھرب ڈالر پھونک چکا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY