علی ابن الحسین زین العابدین نے فرمایا۔۔دوسراحصہ،نگہت نسیم

0
213

خطبہ امام زین العابدین کا دوسرا حصہ

جب طویل مسافت کے بعد اسیران کربلا شام پہنچے تو انہیں دربار یزید میں پیش کیا گیا ۔ امام سید الساجدین زین العابدین نے یزید ملعون کے دربار میں اہل شام اور درباریوں سے خطاب کیا۔ اسی خطبہ کے آغاز میں اللہ سبحانہ تعالی کی تعریف کے بعد انہوں نے نسبت رسول پاک کی فضیلیت یوں بیان کی ۔۔۔۔۔۔

اے مرد مانِ شام
عوام الناس ہوشیار ہو جاؤ
اللہ تعالٰی نے بے شمار نبی و اولیاء دنیا میں بھیجے ہیں اور اُن میں سے سات فضیلتیں اللہ تعالٰی نے ہم کو خاص طور پر بخشی ہیں ۔
1 ۔ علم
2۔ حلم
3 ۔ بخشش
4۔ بخشش
5 ۔ بزرگواری
6 ۔ محبت
7 ۔ مومنین کے دلوں میں ہماری محبت قائم کی ہے ۔

ہماری فضیلت کے لئَے یہ کیا کم ہے کہ ۔۔
1۔ ہمارے جد رسولِ خدا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہیں
2۔ راست گو اُمت کے صدیق حضرت علی علیہ السلام ہمارے دادا ہیں
3۔ جعفر طیار ع اور حمزہ ع ہم میں سے ہیں
4۔ شیر خدا و شیرِ رسولِ خدا صلہ اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دونوں نواسے حسن ع اور حسین ع ہم میں سے ہیں

اے لوگو ۔۔!
تم میں سے کچھ حضرات تو مجھے جانتے ہونگے کہ میں خانوادہ رسول اللہ ہوں ۔
( جاری ہے )

ڈاکٹر نگہت نسیم

(مضمون کی تیاری کے لئے نیٹ کے مضامین اور نہج البلاغہ سے مدد لی گئی
خصوصاً بیانِ خطبہ از ناسخ التواریخ ج ۲ صفحہ 167 ، طبع جدید زندگی حضرت سید الشہداء)

نگہت نسیم

SHARE

LEAVE A REPLY