خواجہ سراؤں کے لیے نوکریوں کا علیحدہ کوٹہ مختص کرنے کی سفارش

0
139

اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے کابینہ کوخواجہ سراؤں کے لیے وفاقی حکومت میں نوکریوں کے لیےعلیحدہ کوٹہ مختص کرنےکی سفارش کردی ہے۔
خواجہ سراؤں کے لئے علیحدہ کوٹہ مختص کرنے کی سفارش سیکریٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن میاں اسدحیااللہ کی جانب سے نیشنل فنانس کمیٹی فارمولہ کےتحت کی گئی۔
سیکریٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے2017کی نئی مردم شماری کی بنیاد پر سرکاری نوکریوں کےکوٹہ کو اپ گریڈ کرنے کی بھی سفارش کرتے ہوئے کہا کہ 1998 میں ہونے والی مردم شماری میں حاصل تعداد کی بنیاد پر نوکریوں کا کوٹہ مختص کیا گیا ہے حالیہ مردم شماری میں آبادی میں بہت اضافہ ہوا ہے،نئی مردم شماری میں حاصل تعداد کی بنیاد پر مختص کوٹے کو اپ گریڈ کیاجائے۔
میاں اسدحیااللہ کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ مذکورہ نوکریوں کےحوالے سے کوٹہ کی سفارش اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں کی گئی ہے جبکہ کابینہ مخصوص افراد کے حوالے سے منظوری بھی دے چکی ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ کابینہ کی منظوری کے بعد مخصوص افراد سی ایس ایس کے کسی بھی گروپ کےلئے درخواست دے سکتے ہیں اس لئے سفارش پر قانون سازی کے عمل کو جلد ازجلد مکمل ہونا چاہیے۔
سفارش پرتفصیلی بحث کےبعد کابینہ نے وزارت قانون و انصاف کواحکامات دیتے ہوئے کہا کہ بل کو حتمی بحث کے لئے پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے۔
واضح رہے کہ خواجہ سراؤں کے حوالے سے بل 28اگست 2013سے نیشنل اسمبلی میں التوا کا شکار ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY