ایک ہفتے کے دوران پاکستان سٹاک ایکسچینج میں 930 پوائنٹس کی کمی سے انڈیکس 39 ہزار 80 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔

ایک طرف ملک میں سیاسی عدم استحکام تو تھا ہی وہی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے نے عالمی سطح پر بھی نیا بحران کھڑا کردیا جس سے پوری دنیا میں احتجاج کا سلسلہ شروع ہوگیا اور عالمی سرمایا کاروں نے دنیا بھر کی سٹاک مارکیٹوں سے پیسہ نکالنا شروع کردیا جس کے اثرات پاکستان سٹاک ایکسچینج پر بھی نمایا نظر آئے۔

جمعرات کے روز سٹاک مارکیٹ 1100 پوائںٹس سے زائد نیجے آگئی مگر جمعے کے روز انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر اچانک ساڑے 4 روپے بڑھ جانے سے بیرونی سرمایا کاروں نے سٹاک مارکیٹ میں ایک بار پھر سرمایا لگانا شروع کردیا جس سے ایک وقت میں مارکیٹ میں 500 پوائنٹس سے زائد کی تیزی بھی دیکھنے میں آئی مگر اختتام پر سٹاک مارکیٹ 295 پوائںٹس کے اضافے سے 39 ہزار 80 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوئی۔

SHARE

LEAVE A REPLY