ترکی کی سرکاری نیوز ایجنسی انادولو کے مطابق ترک حکومت نے ایک ہزار آٹھ سو تئیس سرکاری ملازمین کو ان کے عہدوں پر بحال کر دیا ہے۔

سن دو ہزار سولہ میں ناکام فوجی بغاوت کے بعد شروع ہونے والے حکومتی کریک ڈاؤن کے نتیجے میں ان ملازمین کو معطل کیا گیا تھا۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے ایک ایسا ایپ ڈاؤن لوڈ کیا تھا، جو امریکا میں مقیم ترک مذہبی رہنما فتح اللہ گولن کی تحریک کی طرف سے پیغام رسانی کے لیے استعمال کیا جا رہا تھا۔

تاہم گزشتہ سال ہی واضح ہو گیا تھا کہ ہزاروں لوگوں نے اس ایپ کی حقیقت کو جانے بغیر ہی اسے ڈاؤن لوڈ کیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY