پارلیمنٹ سپریم ہے، قانون سازی اس کی ذمہ داری ہے، قانون اپ ڈیٹ کر دیں، ججز کوتاہی کریں گے تو ذمہ داری لوں گا، قانون کے مطابق انصاف فراہم کرنا ہے، من مرضی کا نہیں، چیف جسٹس سپریم کورٹ کا جوڈیشل کانفرنس سے خطاب۔

کراچی: چیف جسٹس ثاقب نثار نے جوڈیشل کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئین کے تحت انصاف ہر شہری کا بنیادی حق ہے، لوگوں کو شکایات ہیں کہ انہیں وقت پر انصاف نہیں ملتا، آج کل جو فیصلے آ رہے ہیں، ان میں من مرضی زیادہ شامل ہے، جو آرڈر آ رہے ہیں ان میں قانونی پہلو کم نظر آ رہا ہے، قانون کے مطابق انصاف فراہم کرنا ہے، فیصلوں میں تاخیر کے ذمہ دار صرف ہم نہیں ہیں کیونکہ عدالتوں میں وہ سہولتیں دستیاب نہیں ہیں جو ہونی چاہیں۔

چیف جسٹس نے مزید کہا کہ سہولتوں کی کمی کی وجہ سے جج پورا ان پٹ نہیں دے پاتے، یہ سہولتیں ہم نے نہیں دینی، آپ جانتے ہیں کس نے دینی ہیں، پارلیمنٹ سپریم ہے، قانون بنانا اسی کی ذمہ داری ہے، ہمیں قانون بنا دیں، پھر ججز کوتاہی کریں گے تو ذمہ داری لوں گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY