دنیا کا سفر طے کرتی، 18قیراط سونے سے بنی چھ کلو گرام وزنی فیفا فٹبال ورلڈ کپ ٹرافی ہفتے کو خصوصی طیارے کے ذریعے تھائی لینڈ کے چیانگ مائی ائیرپورٹ سے لاہور پہنچی جہاں مقامی ہوٹل میں اس کی رونمائی ہوئی۔

اس موقع پر شائقین کی ایک بڑی تعداد نے ٹرافی کو قریب سے دیکھا، فرانس کے سابق فٹبالر کرسٹیان کیرم، کوکا کولا پاکستان کے جنر ل منیجر رضوان یو خان اور فیفا کے دیگر نمائندے فٹبال کی عالمی تنظیم کے وفد میں شامل تھے جبکہ پاکستانی وفد میں سابق کپتان یونس خان، گلوکارہ مومنہ مستحسن، قر العین بلوچ، اداکارہ مایا علی، زینب عباس سمیت دیگر شامل تھے۔

روس میں ہونے والے فٹبال ورلڈ کپ سے پہلے ٹرافی کا عالمی دورہ 22 جنوری سے شروع ہوا تھا۔ فیفا شیڈول کے مطابق ورلڈ کپ ٹرافی پاکستان کے دورے کے بعد 4فروری اتوار کو قازقستان روانہ ہوگی۔

ٹرافی چھ براعظموں کے 51ممالک کے 91شہروں کا سفر کرے گی جو 30اپریل کو جاپان میں ختم ہوگا جہاں سے اسے روس پہنچایا جائے گا۔ لاہور میں تقریب کے موقع پر کوکاکولا پاکستان و افغانستان کے جنرل منیجر رضوان یو خان نے کہا کہ ہمارا ادارہ پاکستان ایسے اچھے کاموں میں تعاون کررہا ہے جو لوگوں کو دل سے پسند ہے اور اس طرح کے کاموں میں وہ آگے بڑھ کر انہیں ایسی بلندیوں تک لے گیا ہے جہاں اس سے پہلے کوئی نہ لے جاسکا۔

ہم سب جانتے ہیں کہ حالیہ چند سالوں کے دوران ہمارے ملک میں مختلف قوموں، زبانیں بولنے والوں اور مختلف طبقات میں فٹبال کی مقبولیت غیرمعمولی طور پر بڑھ گئی ہے۔ مارکیٹنگ ڈائریکٹر عباس ارسلان نے کہا ہمارا ادارہ دنیا بھر میں شائقین فٹبال کا جذبہ دوسروں کے ساتھ شیئر کرتا ہے۔

ٹرافی کی پاکستان آمد ان لوگوں کے لئے غیرمعمولی موقع ہے جو فٹبال کی تاریخ میں دلچپسپی رکھتے ہیں اور اس کھیل سے متعلق اپنے جذبات و احساسات کا ایک دوسرے سے تبادلہ کرتے ہیں۔ تقریب سے وزیر کھیل پنجاب جہانگیر خانزادہ، یونس خان، کلیم اللہ اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

SHARE

LEAVE A REPLY