برطانوی وزیراعظم تھریزا مے نے کہا ہے کہ روس کی جانب سے 23 برطانوی سفارت کاروں کی ملک سے بے دخلی سے ایک سابق ڈبل ایجنٹ کو زہر خورانی کے واقعے سے متعلق حقائق میں کوئی تبدیلی رونما نہیں ہوگی۔
وہ لندن میں ہفتے کے روز برطانوی حکمراں جماعت کنزرویٹو پارٹی کے بہار فورم سے خطاب کررہی تھیں۔انھوں نے کہا کہ روس بین الاقوامی قانون کی ننگی خلاف ورزی کا مرتکب ہوا تھا۔اس کے خلاف ہم آیندہ اقدامات کے بارے میں آیندہ دنوں میں کوئی فیصلہ کریں گے۔

انھوں نے کہا کہ ’’ روس کے ردعمل سے معاملے سے متعلق حقائق تبدیل نہیں ہوں گے۔برطانوی سرزمین پر دوافراد پر قاتلانہ حملے کی روسی ریاست ہی ذمے دار ہے اور اس کا کوئی متبادل نتیجہ اخذ نہیں کیا جا سکتا ہے۔
تھریز ا مے نے کہا کہ ’’ ہم برطانوی سرزمین پر برطانوی شہریوں یا دوسروں کی زندگیوں پر روسی حکومت کی جانب سے حملوں کے ردعمل میں کوئی رو رعایت نہیں برتیں گے‘‘۔ان کا کہنا تھا کہ ہمیں دنیا بھر سے ہمارے اتحادی ممالک کی جانب سے بھرپور حمایت حاصل ہوئی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY