ریحام کی مبینہ کتاب ۔قیصر نقوی۔ملتان

1
162

قیصر نقوی پاکستان میں ریڈیو ٹی وی کی مقبول شخصیت ہیں اور عام بیدار مغز شہری بھی۔ ریحام کی مبینہ کتاب کے تنازعے پر ایک عام شہری کیا سوچتا ہے انکی یہ تحریر متعدد پاکستانی عوام کی غمازی کرتی ہے
ادارہ عالمی اخبار
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

میں نہ تو صحافی ھوں نہ کوئی سیاسی تجزیہ نگار ۔ایک عام پاکستانی شہری ھونے کے ناطے پچھلے چند دنوں سے مختلف ٹیلی ویثزن چینلز پر ریحام کی مبینہ کتاب کے حوالے سے ھونے والی بحث سن رھا ھوں ۔

اس ساری بحث کو سن کر جس میں ریحام کا انٹرویو بھی شامل ھے میں اس نتیجے پر پہنچا ھوں کہ مذکورہ کتاب کا جو مسودہ حمزہ عباسی کو بظاھر ملا ھے وہ دراصل باقائدہ منصوبہ بندی کے ساتھ ان تک پہنچایا گیا ھے

ریحام برطانیہ کی شہری ھے اور اچھی طرح جانتی ھے کہ اس طرح کے الزامات جنہیں وہ ثابت نہیں کر سکتی اسے کہاں پہنچا سکتے ھیں ۔۔۔ اس کتاب کو چھاپ کر وہ یا اسکے مبینہ سپانسرزجو مقاصدحاصل کرنا چاھتے تھے. ۔۔۔۔۔۔ ( عمران خان کو بدنام کرنا اور میڈیا کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگانا۔۔)۔۔۔۔۔ وہ سب کتاب چھاپے بغیر وہ حاصل کر رھے ھیں ۔۔اور خان کے ھمدرد اپنی معصومیت میں انکے آلہءکار بن رھے ھیں ۔۔

یہ میرا اندازہ ھے جو اللہ کرے غلط ھو ۔۔۔۔ ویسے کتاب چھپے گی ضرور مگر اس میں یہ سب نہیں ھوگا ۔۔۔۔واللہ علم باثواب

مزید کیا لکھوں ۔ایک عجب تماشہ لگا ہوا ہے ہر ٹی وی پر۔ جو ٹی وی کھولو یہی موضوع ہے اور اس اس رخ سے گفتگو ہے کہ بعض اوقات شرم محسوس ہوتی ہے

مجھے تو یہی سمجھ آئی ھے کہ یہ سب سوچی سمجھی سازش تھی جسے عمران خان کے بہی خواھوں نے اپنی معصومیت میں ان سازشیوں کا آلہ کار بن کر پاہہ تکمیل کو پہنچایہ ۔۔۔ ورنہ ایک بچہ بھی جانتا ھے کہ برطانیہ میں رھتے ھوئے آپ بغیر مکمل ثبوت کے اس طرح کی بات پرنٹ کر ھی نہیں سکتے ۔۔

اوّل تو کوئ پبلشر اسے چھاپے گا ھی نہیں اور اگر آپ خود اپنے خرچ پر اسے چھاپ بھی لیں تو جن شخصیات پر آپ الزام عائد کر رھے ھیں ۔۔ کتاب چھپنے کے بعد انکی ڈیفرمیشن یعنی ہتک عزت کا سامنا کرنا پڑے گا جو کم از کم برطانیہ میں آسان کام نہیں ھے

ذرا تصوّر کریں کہ کتاب جولائ یا اسکے بعد ،جب مارکیٹ میں آئیگی اور اس میں وہ سارا مواد سرے سے ھوگا ھی نہیں جس پر آجکل میڈیا میں زور شور سے بحث ھورھی ھے تو یہ سارے افلاطون کہاں منہ چھپائیں گے ۔۔۔۔ عمران خان کی تو جو بدنامی ھوئ سو ھوئ ۔۔۔ان سوھنے منڈوں حمزہ عباسی اور مراد سعید کا کیا بنے گا ۔۔۔ خدا را بتی کے پیچھے بھاگنے سے پہلے تسلی کر لیا کریں کہ بتی ٹرک کی ھے یا سائیکل کی

قیصر نقوی۔ملتان

SHARE

1 COMMENT

  1. The view point presented by Qaiser Naqvi is understandable. Regards. Khalid Asghar, former Controller/ Station Director, Radio Pakistan, Lahore.

LEAVE A REPLY