مشتاق احمد یوسفی کی نماز جنازہ اور تدفین

0
72

اردو ادب کے مشہور و معروف مزاح نگار مشتاق احمد یوسفی کراچی میں94 برس کی عمر میں انتقال کرگئے۔ ان کی نماز جنازہ بروز جمعرات بعد نماز ظہر سلطان مسجد ، ڈیفنس میں ادا کی گئی جس میں مختلف مکاتیب فکر کے لوگوں نے شرکت کی جس کے بعد انہیں کراچی میں ہی سپرد خاک کر دیا گیا

مشتاق احمد یوسفی کافی عرصے سے علیل تھے

آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کے صدر احمد شاہ نے اطلاع ملتے ہی آرٹس کونسل میں3روزہ سوگ کا اعلان کرتے ہوئے ہفتہ کو منعقد ہونے والی عید ملن پارٹی طعام آم اور کلام ( موسیقی کا پروگرام بیٹھک) سمیت آرٹس کونسل کے تمام پروگرام ملتوی کردیئے

مشتاق احمد یوسفی کا پہلا مجموعہ ’’چراغ تلے‘‘ کے نام سے منظر عام پر آیا۔ان کے کل پانچ مجموعے شائع ہو چکے ہیں۔ ان کی مشہور کتابوں میں چراغ تلے،خاکم بدہن،زرگزشت،آب گم،شام شعریاراں شامل ہیں جب کہ آپ کی ادبی خدمات کے پیش نظر حکومت پاکستان نے 1999ء میں ستارئہ امتیاز اور2002ء میںہلال امتیاز کے تمغوں سے نوازا۔

SHARE

LEAVE A REPLY