دو نومبرکیلئے 25 ہزار تک نفری طلب کیے جانے کا امکان

0
355

اسلام آباد: عمران خان کی اسلام آباد لاک ڈاؤن کرنےکےلیے تیاریوں زوروں پر ہیں۔ دوسرے شہروں سے پولیس اور ایف سی کے ہزاروں اہل کار اسلام آباد طلب کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے جبکہ پی ٹی آئی قائدین اور شیخ رشید کی نظر بندی کیلئے صرف وزیر اعظم کے اشارے کا انتظار ہے ۔
مشن لاک ڈاؤن اسلام آباد ناکام بنانے کیلیے حکومت نےخیبر پختونخوا سے ایف سی جبکہ پنجاب اور کشمیر سے پولیس بلانے کا فیصلہ کرلیاہے۔ذرائع کے مطابق 25 ہزار تک نفری طلب کیے جانے کا امکان ہے۔ ضلعی انتظامیہ نے مہمان اہلکاروں کی رہائش کا بندوبست کرنے کیلیے وزارت داخلہ کو خط بھی لکھ دیاہے۔
تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان، شاہ محمودقریشی، جہانگیر ترین اور شیخ رشید سمیت اسلام آباد بند کرنے کے خواہشمندوں کو نظر بند کرنے کی تجویز بھی حکومت کو دے دی گئی ہے جس پرعملدرآمد وزیر اعظم کی منظوری کے بعد ہو گا۔
حکومت کے قانونی مشیروں کا کہنا ہےشہر بند کرنے کا اعلان نقص امن کے زمرے میں آتا ہےاور اسلام آباد بندش کی خواہش رکھنے والوں کے ویڈیو بیانات کو نظربندی کی بنیاد بنایا جائے گا جسے عدالت میں چیلنج کرنا آسان نہیں ہوگ

SHARE

LEAVE A REPLY