عمران خان اور طاہر القادری سمیت 70 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری برقرار

0
345

انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) اور پارلیمنٹ حملہ کیس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان اور پاکستان عوامی تحریک (پی اے ٹی) کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کے وارنٹ گرفتاری برقرار رکھے ہیں۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج سید کوثر عباس زیدی نے مذکورہ کیس کی سماعت کی۔

پولیس کی جانب سے چئیرمین تحریک انصاف عمران خان اور سربراہ عوامی تحریک ڈاکٹر طاہرالقادری کے وارنٹ گرفتاری کی تعمیلی رپورٹ جمع نہ کرائی جاسکی۔

عدالت نے تعمیلی رپورٹ جمع نہ ہونے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے عمران خان اور طاہر القادری سمیت 70 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری برقرار رکھتے ہوئے انھیں 17 نومبر تک گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم سنا دیا

دوسری جانب 6 حاضر ملزمان کو عدالت میں حاضری سے استثنیٰ دیتے ہوئے کیس کی سماعت 17 نومبر تک ملتوی کردی گئی۔

یاد رہے کہ 2014 میں اسلام آباد میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور پاکستان عوامی تحریک (پی اے ٹی) کے دھرنے کے دوران مشتعل افراد نے یکم ستمبر کو پی ٹی وی ہیڈ کوارٹرز پر حملہ کردیا تھا، جس کی وجہ سے پی ٹی وی نیوز اور پی ٹی وی ورلڈ کی نشریات کچھ دیر کے لیے معطل ہوگئی تھیں.

حملے میں ملوث ہونے کے الزام میں تقریباً 70 افراد کے خلاف تھانہ سیکریٹریٹ میں پارلیمنٹ ہاؤس، پی ٹی وی اور سرکاری املاک پر حملوں اور کار سرکار میں مداخلت کے الزام کے تحت انسداد دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY