آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم

0
157

سپریم کورٹ آف پاکستان نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیدیا ہے۔

سپریم کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کے بارے میں تحریری حکم نامہ جاری کرتے ہوئے سابق صدر آصف علی زرداری، ان کی ہمشیرہ فریال تالپور اور اس سے فائدہ اٹھانے والوں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیدیا ہے۔

ایف آئی اے کی جانب سے جعلی اکاؤنٹس میں پیسہ جمع کرانے اور فائدہ اٹھانے والوں کی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی تھی۔ عدالت نے سمٹ بینک کا 7 ارب روپے کا زرِ ضمانت بھی منجمد کر دیا ہے۔

سپریم کورٹ کی جانب سے جن شخصیات کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ڈالنے کا حکم دیا گیا ہے ان میں سابق صدر آصف زرداری، فریال تالپور، انور مجید، نازلی مجید، علی کمال مجید، اقبال خان نوری اور عبدالغنی مجید بینیفشری کا نام شامل ہے۔

عدالتِ عالیہ نے آصف علی زرداری اور فریال تالپور کو 12 جولائی کو پیش ہونے کا حکم جاری کرتے ہوئے آئی جی سندھ کو تمام افراد کی پیشی یقینی بنانے کا حکم دیا ہے۔

دوسری جانب آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے، ایف آئی اے کی تازہ ترین کارروائیوں اور عام انتخابات کے معاملات پر پیپلز پارٹی کا ہنگامی اجلاس منگل کو لاہور میں ہو گا۔

پیپلز پارٹی کی قیادت نے ایف آئی اے کی جانب سے پارٹی قیادت کے خلاف کارروائیوں، آصف علی زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے معاملے پر ہنگامی اجلاس طلب کر لیا ہے۔

اجلاس بلاول ہاؤس لاہور میں ہو گا جس کی صدارت آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو مشترکہ طور پر کریں گے۔ اجلاس میں پیپلز پارٹی کی سینئر قیادت شرکت کرے گی جبکہ بلاول بھٹو بھی ملتان میں انتخابی مہم کے بعد پہنچیں گے۔

اجلاس میں ایف آئی اے کی کارروائیوں سے پیدا شدہ صورتحال پر غور کیا جائے گا۔ نواز شریف کو ہونے والی سزا اور عام انتخابات کے حوالے سے بھی مشاورت ہو گی، اجلاس میں آئندہ لائحہ عمل کے حوالے سے اہم فیصلے متوقع ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY