تحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ جاگیردارانہ نظام جمہوریت کی ضد ہے۔

پارٹی منشور پیش کرتے ہوئے خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت سے پہلے فرسودہ جاگیردارانہ نظام تھا ۔

انہوں نے مستونگ واقعے کی مذمت کی اور کہا کہ دہشت گردی کی اس نئی لہر کے سدباب کےلئے فوری ایکشن پلان تیار ہونا چاہیے۔

ایم کیو ایم رہنما نے کہا کہ ہم چاہتے تھے جمہوریت ایوانوں سےنکل کر گلیوں اور محلوں میں پہنچ جائے،سندھ میں معذور بلدیاتی نظام دیا گیا ۔

ان کا مزید کہناتھاکہ اقتدار مافیہ نے ایم کیوایم کے خلاف پراپیگنڈہ کیا، پڑھے لکھے نوجوانوں کومتحدہ نے پارلیمان میں بھیجا۔

خالد مقبول صدیقی نے مطالبہ کیا کہ جمہوریت کے ثمرات چند گھرانوں کے بجائے عام آدمی کی دہلیز تک پہنچنے چاہیے۔

SHARE

LEAVE A REPLY