جو بلیک نہیں وہ بلیک میل ہو رہا ہے۔ ڈاکٹر نگہت نسیم

0
46

بلیک بلیک بلیک ۔ کیا ہے جو بلیک نہیں ہو رہا،جو بلیک نہیں وہ بلیک میل ہو رہا ہے۔ ویسے منہہ کالا ہونے کو انگریزی میں کیسے کہیں گے
اب مسلہ یہ ہے کہ کچھ حلقے یہ کہتے ہیں کہ ملکی کرنسی کی بے وقعتی کے بعد کاروبار چینی اور امریکی کرنسی میں کیا جائے کہ کہیں جلد یا بدیر ایسا کرنا ہی تو پڑے گا

موجودہ حکومت کی اسوقت تک کوئی معاشی یا معیشی پالیسی نظر نہیں آ رہی سارا زور دوست ممالک سے قرض لینے پر ہے۔ وہی پرانی روش کہ قرض اتارنے کے لیئے مزید قرض لیا جائے۔ وزیر خزانہ اسد عمر آج کل میڈیا سے روپوش ہیں اس لیئے کہ انکے سوالات کے کیا جواب دیں گے

پاکستان میں امریکی ڈالرز کی بلیک میں فروخت کا دھندہ بے نقاب ہونے کی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) نے پاکستان میں بلیک میں ڈالر فروخت کرنے کے دھندے کے بے نقاب ہونے کا انکشاف کیا ہے۔

ایف آئی اے کے مطابق پاکستان میں ڈالرز کی بلیک میں فروخت کرنے میں غیرملکیوں کے ملوث ہونے کا بھی انکشاف سامنے آیا ہے۔ ایف آئی اے کی تحقیقات میں بتایا گیا کہ نائجیرین باشندے نے ڈالرز فراہم کرنے کا جھانسہ دے کر پاکستانی شہریوں کو دھوکہ دے دیا۔

ایف آئی اے نے پاکستانی شہری سے کئی ملین روپے ہتھیانے والا نائیجیرین باشندے کو گرفتار بھی کر لیا ہے۔

ایف آئی اے نے بتایا کہ نائجیرین باشندے آزموکی کے قبضہ سے لیپ ٹاپ اورالیکٹرانک آلات برآمد کیے گئے۔ ایف آئی اے نے مزید بتایا کہ نائیجیرین باشندہ سوشل میڈیا پر سادہ لوح لوگوں کواپنے جال میں پھنساتا تھا اور اب تک کئی لوگ اس کے جال میں پھنس چکے ہیں۔ ایف آئی اے کی جانب سے شہریوں کو بھی ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ ایسے افراد سے محتاط رہیں اور ایسے کسی شخص سے کسی قسم کا لین دین نہ کریں جس سے ان کی جان پہچان نہ ہو۔

بالخصوص سوشل میڈیا کے ذریعے رابطہ کرنے والے کسی شخص پر بھروسہ نہ کیا جائے۔ ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ زیر حراست نائیجیرین باشندے آزموکی سے تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے ، عین ممکن ہے کہ اس سے کی جانے والی تفتیش کے نتیجے میں مزید افراد کی گرفتاریاں بھی عمل میں لائی جائیں گی

ڈاکٹر نگہت نسیم

SHARE

LEAVE A REPLY