چار عرب ممالک کے وزرائے خارجہ نے مصر میں اپنے ایک اجلاس کے بعد کہا کہ قطر موجودہ بحران کو ختم کرنے میں ’سنجیدہ نہیں‘ ہے۔

سعودی عرب، بحرین، متحدہ عرب امارات اور مصر کے وزرائے خارجہ کا ایک مشترکہ بیان جاری کرتے ہوئے کہنا تھا کہ قطر نے ان ممالک کے تیرہ مطالبات کا کوئی تسلی بخش جواب نہیں دیا۔ سعودی وزیر خارجہ کے مطابق قطر کا بائیکاٹ اس وقت تک جاری رہے گا، جب تک وہ اپنی پالیسیاں تبدیل نہیں کرتا۔

انہوں نے کہا کہ مناسب وقت پر قطر کے خلاف مزید پابندیاں عائد کی جائیں گی، جو بین الاقوامی قوانین کے مطابق ہوں گی۔ دوسری جانب ترکی نے ایک مرتبہ پھر عرب ممالک کی قطر کے خلاف پابندیوں پر غصے کا اظہار کرتے ہوئے دوحہ حکومت کی حمایت جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY