چین اور بھارت کے دارالحکومتوں میں بھی اسموگ سےعوام کی پریشانی بڑھ رہی ہے۔ آنکھوں میں جلن، گلے میں خرابی کی شکایات میں اضافہ ہوا ہے۔
بھارتی دارالحکومت نئی دلی میں دیوالی کے بعد بڑھنے والی آلودہ دھند میں اب تک کمی نہیں ہوئی ۔ سردی اور فضا میں نمی کے اضافے کے ساتھ ہی آلودہ دھند کی لہرشدت اختیار کرگئی ہے۔ جس کی وجہ سے شہریوں کو سانس لینے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ دل کے امراض ، سینے میں انفیکشن کی شکایت ، ناک کان گلے کے مریضوں کی تعداد بڑھی ہے ۔
دوسری جانب بیجنگ میں اس سیزن کا پہلا اورنج الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ اگلے چار روز کے لیے شدید آلودہ دھند کے خدشات ظاہر کیے گئے ہیں ۔
چینی دارالحکومت کے باشندوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ آلودہ دھند کے مضر اثرات سے محفوظ رہنے کے لیے ماسک پہنچیں، آنکھوں میں جلن کی صورت میں ٹھنڈے پانی سے آنکھیں دھوئیں ۔
ادھر چین کے شمالی حصے میں سردی سے بچنے کے لیے کوئلے کا استعمال بڑھنے سے آلودہ دھند یعنی اسموگ شدت اختیار کرگئی۔ ہیبئی، ہنان ، شینڈونگ اور شان ژی صوبوں میں صنعتوں کو اسٹیل کی پیداوار میں کمی کی ہدایت کردی گئی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY