چھاتی کے سرطان کا نیا انقلابی طریقہ علاج

0
94

برطانیہ میں سائنسدانوں نے چھاتی کے سرطان کا نیا انقلابی طریقہ علاج دریافت کیا ہے۔ ڈاکٹر نے یقین ظاہر کیا ہے کہ اس طریقہ علاج سے اُن خواتین کو فائدہ پہنچے گا جن پر کوئی دوا کارگر نہیں ہوتی۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق امیونو گرافی ادویات کےانقلابی کمبی نیشن سے برطانیہ کی 65 سالہ برطانوی خاتون اینا جونز کاعلاج کیا جارہاہے ،جس سے اُس کی زندگی کا دورانیہ بڑھنے کی امید ہے۔

اینا جونز ایک دہائی سے زائد عرصے سے ہمت و حوصلے کے ساتھ اس مرض کا مقابلہ کررہی ہیں، اس سے قبل وہ کیموتھراپی کے کئی مراحل سمیت دس مختلف طریقہ علاج آزماچکی ہیں لیکن ہر علاج ناکام رہا، اب ان کی امیدیں نئے طریقہ علاج سے وابستہ ہیں۔
وہ 6 ہفتوں نے یہ علاج کرارہی ہیں، ان کاکہنا ہے کہ یہ دوا حیرت انگیز ہے۔

اینا جونز کا کہنا تھا کہ یقیناً یہ میرے لئے گھبراہٹ کا باعث تھا کیونکہ پہلی بار یہ دوا مجھ پر آزمائی جارہی تھی اور اس کے سائیڈ افیکٹس کے بارے میں کوئی نہیں جانتا تھا لیکن یہ میرے لئے خوشی کا باعث ہے۔
مسز جونز کو اگست 2004ء میں چھاتی کے سرطان کی تشخیص ہوئی جو اب ایڈوانس اسٹیج پر پہنچ چکا ہے۔
واضح رہے کہ برطانیہ میں ہرسال چھاتی کے سرطان میں مبتلا گیارہ ہزار خواتین موت کے منہ میں چلی جاتی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY