نئی حلقہ بندیاں، سیاسی جماعتوں کا الیکش کمیشن کے سامنے تحفظات کا اظہار

0
68

پارلیمانی سیاسی جماعتوں نے نئی حلقہ بندیوں پر الیکشن کمیشن کے سامنے اپنے تحفظات کا اظہار کر دیا۔ سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کا کہنا ہے کہ حلقہ بندیاں مردم شماری کی بنیاد پر نہیں بلکہ ووٹر فہرستوں کے مطابق ہونی چاہئیں۔
الیکشن کمیشن میں نئی حلقہ بندیوں اور ووٹر فہرستوں سے متعلق اجلاس ہوا جس میں پارلیمانی سیاسی جماعتوں کے وفد نے شرکت کی۔ مسلم لیگ (ن)، ایم کیو ایم، جے یو آئی (ف) اور قومی وطن پارٹی کے حلقہ بندیوں پر تحفظات کا اظہار کیا۔ ادھر الیکشن کمیشن نے حلقہ بندیوں اور انتخابی فہرستوں پر نظر ثانی کا کام مئی کے پہلے ہفتے میں مکمل کرنے کا اعلان کر دیا۔
سیاسی جماعتوں نے موقف اختیار کیا کہ حلقہ بندیوں کے حوالے سے مطمئن نہیں، حلقہ بندیاں مردم شماری کی بنیاد پر نہیں بلکہ ووٹر فہرستوں کے مطابق ہونی چاہیں۔
مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے کہا کہ پانچ مارچ کو لسٹیں لگنے کے بعد اپنے اعتراضات اٹھائیں گے۔ جماعت اسلامی کی جانب سے ووٹر فہرستوں میں خواتین ووٹرز کی تصاویر اور رجسٹریشن میں کمی پر تحفظات کا اظہار کیا گیا۔ الیکشن کمیشن کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عام انتخابات کیلئے مرحلہ وار اور وقت کے مطابق ذمہ داریوں سے عہدہ برا ہو رہے ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY