دل سے بلال مانگو خالق سے اب دعا یہ

0
75

میں جانتا ھوں رتبہ نعلین مرتضی کا
سو لب پہ ھے ترانه نعلین مرتضی کا

جنت میں داخلے کی جلدی نہیں ھے مجھ کو
پہلے میں لوں گا بوسہ نعلینِ مرتضٰی کا

محشر کے دن موا لی، فضل خدا کی خاطر
لکھ لائے ہیں قصیدہ نعلین مرتضی کا

خم کا پیام جن کو بھولا نہیں ہے اب تک
وہ جانتے ہیں رتبہ نعلینِ مرتضٰی کا

دنیا کا ھر سکندر پھر ناز کرتا مجھ پر
جو باندھتا میں تسمہ نعلین مرتضی کا

صد شکر میں ازل سے ھوں قائل ولایت
ملتا ھے مجھ کو صدقہ نعلین مرتضی کا

ارض حرم سے کیوں نہ هو عشق مومنوں کو
چوما ہے اس نے تلوا نعلین مرتضی کا

دل سے بلال مانگو خالق سے اب دعا یہ
هو خواب میں نظارہ نعلین مرتضی کا

بلال رشید

SHARE

LEAVE A REPLY