بہار کی چاپ سن رہی ہوں میں۔ ثانیہ شیخ

0
198

قطرہ قطرہ
تری آ واز کا نم
روح کی بانجھ ٹہنیوں کو
بھگوتا جا رہا ہے
تمناؤں کی پتیاں
سر اٹھا تی ہیں
خواہشوں کے شگوفے
پھوٹنے کو ہیں

بہار کی چاپ سن رہی ہوں میں۔

ثانیہ شیخ

SHARE

LEAVE A REPLY