مناجات بدرگاہ قاضی الحاجات۔ از۔ احمد علی برقی

0
235

شبِ قدر ہر شخص کو راس آئے
رہیں سایہ گُستر یہ رحمت کے سائے
خدایا ہمیں نیک و بد کی سمجھ دے
نیا کوئی فتنہ نہ اب سر اُٹھائے
ہے اب اوج پر دورِ سرمایہ داری
نہ جانے نیا کون سا گُل کِھلائے
خدایا ہمیں اُن سے محفوظ رکھنا
پُرانے شکاری نیا جال لائے
ضرورت ہے شیرازہ بندی کی ہم کو
مزید اور یہ مُنتشر ہو نہ جائے
عطا کر ہمیں زورِ بازوئے حیدر
ہمارا جو دشمن ہے بچ کر نہ جائے
دعا تجھ سے ہے یہ بصد اِنکساری
رہیں مِل کے آپس میں اپنے پرائے

LEAVE A REPLY