افغانستان کے ایک متنازعہ جنگی سردار گلبدین حکمت یار نے کہا ہے کہ ملک میں امریکی فوجیوں کی تعداد میں اضافہ قبول نہیں کیا جا سکتا۔

افغان دارالحکومت کابل میں رپورٹرز کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان کو ایک طاقتور صدر کی قیادت میں ایک مضبوط مرکزی حکومت کی ضرورت ہے۔

حکمت یار نے یہ بھی کہا کہ اُن کی تنظیم حزبِ اسلامی حکومت کے ساتھ مکمل تعاون کرنے کے لیے تیار ہے تا کہ افغانستان میں امن و استحکام قائم ہو سکے۔

نوے کی دہائی میں افغان دارالحکومت میں ہونے والی خانہ جنگی کے دوران ہزاروں افراد کی ہلاکت کے تناظر میں گلبدین حکمت یار کو انٹرنیشنل پریس میں ’کابل کا قصائی‘ بھی کہا جاتا رہا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY