امریکی ریاست کیلی فورنیا میں لگی آگ سے ہلاکتوں کی تعداد 17 ہو گئی

0
57

امریکی ریاست کیلی فورنیا میں لگی آگ سے ہلاکتوں کی تعداد 17 ہو گئی جبکہ 180 سے زائد لاپتہ ہوگئے، آگ نے مزید 5 ہزار گھر جلا دیئے ہیں، صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ریاست کو آفت زدہ قرار دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست کیلی فورنیا کے جنگلات میں لگی آگ نے مزید تباہی مچا دی ہے، آگ سے جلنے والے گھروں اور دوسری عمارتوں کی تعداد 2 ہزار ہو گئی ہے، آگ ایک لاکھ 15 ہزار ایکڑ رقبے کو اپنی لپیٹ میں لے چکی ہے، 180 سے زائد افراد لاپتہ ہو گئے۔ آگ کے باعث مزید افراد نقل مکانی کر رہے ہیں، راکھ نے ڈزنی لینڈ کا رنگ تبدیل کر دیا، محکمہ فائر بریگیڈ کے مطابق تیز ہوا کے باعث آگ بجھانے میں مشکل پیش آ رہی ہے۔

ادھر وائٹ ہاؤس سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ریاست کو آفت زدہ قرار دے کر امداد کا علان کیا ہے۔

متاثرہ علاقے میں واقع سب سے بڑے شہر سانتا روزا کے بھی آگ سے متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔ آگ شہر کے نواح تک پہنچ گئی ہے اور شہر کے کئی نواحی علاقوں سے رہائشیوں کو نکلنا پڑا ہے۔

سانتا روازا کی آبادی لگ بھگ پونے دو لاکھ ہے۔ دھویں اور گھٹن کے باعث شہر کے دو اسپتالوں کو بھی خالی کرالیا گیا ہے اور مریضوں کو دیگر طبی مراکز منتقل کردیا گیا ہے۔

متاثرہ علاقوں سے بے گھر ہونے والے افراد کے لیے سرکاری اسکولوں اور گرجا گھروں میں عارضی رہائشی کیمپ قائم کردیے گئے ہیں۔

امریکہ کی مغربی ریاستوں میں موسمِ گرما کے سخت اور خشک مہینوں کے دوران جنگلات میں آگ بھڑکنے کے واقعات معمول ہیں جو عموماً تیز ہواؤں کے باعث تیزی سے پھیل جاتی ہے۔

گزشتہ ماہ بھی لاس اینجلس کے نزدیک بھڑکنے والی آگ کے باعث سیکڑوں افراد کو اپنا گھر بار چھوڑنا پڑا تھا۔ اس آگ کو لاس اینجلس کی تاریخ کی سب سے شدید آگ قرار دیا گیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY