ڈپٹی کنٹرولر سینٹرل پروڈکشن یونٹ قومی ورثہ ریڈیو پاکستان لاہور سید شہوار حیدر چھ اپریل کی رات دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے،(اِنَّا لِلّٰہِ وَاِنَّآ اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ) وہ ایک باصلاحیت پروڈیوسر ہونے کے ساتھ ساتھ ایک مقناطیسی شخصیت کے مالک تھے

آج سات اپریل کی صبح 11بجے انہیں کرشن نگر اسلام پورہ لاہور کے قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا ،نماز جنازہ جامع مسجد شیعاں ،حیدر روڈ میں ادا کی گئی جس میں موسیقار مجاہد حسین،شاعر عمران نقوی،گلوکارشوکت علی، انور رفیع، علی رضا پروگرام منیجر سی پی یو شاہد امین،گلوکار پروڈیوسر ثروت علی خان اور سابق کنٹرولر سینٹرل پروڈکشن یونٹ سید خالد وقار سمیت مرحوم کے دوستوں عزیزواقارب اور قومی ورثہ ریڈیو پاکستان لاہور سے تعلق رکھنے والی نمایاں شخصیات شامل تھیں ۔

shahwar haider2

انہوں نے پس ماندگان میں اہلیہ کے علاوہ غم زدہ دو بیٹیاں اور ایک بیٹا چھوڑے ہیں

سید شہوار حیدر نے اپنے 1987ء میں ریڈیو پاکستان کو بطور پروڈیوسر جوائن کیا اور ان کی پہلی تعیناتی ریڈیو پاکستان گلگت میں ہوئی انھوں نے طویل عرصہ ریڈیو پاکستان لاہور میں گزارا ،یہیں پر ہی وہ پہلے سینئر پروڈیوسراور بعد میں ترقی کرکے پروگرام منیجر تعینات ہوئے۔ انہیں موسیقی کے شعبے میں عبور حاصل تھا ان کے بنائے ہوئے نغمات اور غزلیں ریڈیو لاہور سے مقبول ہوئیں ان کا شمار ریڈیو کے ان چیدہ آفیسرز میں کیا جاتا ہے جنہوں نے موسیقی کے حوالے سے ریڈیو کا عروج دیکھا

shahwar haide4

سید شہوار حیدر نے استاد نصرت فتح علی خان ،حامد علی خان،ملکہ ترنم نور جہاں ،مہدی حسن ،غلام علی ،اے نئیراور ان جیسے اپنے فن میں یکتافن کاروں کے ساتھ کام کیا ،کچھ عرصہ قبل ان کو ترقی دے کر سینٹرل پروڈکشن یونٹ ریڈیو پاکستان لاہور میں بطور ڈپٹی کنترولر ،انچارج یونٹ تعینات کردیا گیا تھا جہاں انھوں نے سینکڑوں گیت پروڈیوس کیے جن میں ملی نغمے، غزلیں، کلاسیکل گیت شامل ہیں ان نغمات کو عوام و خواص میں بھر پور پزیرائی حاصل ہوئی اور پاکستان ٹیلی ویژن نے بھی ان گیتوں سے استفادہ کیا ۔ریڈیو پاکستان کیلئے انکی 31سالہ خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا۔

ڈائریکڑجنرل ریڈیو پاکستان شفقت جلیل اور ڈائریکٹر پروگرامز غلام قاسم کوثر بروڈو کی جانب سے مرحوم کی قبر پر پھولوں کی چادر چڑھائی گئی اور اپنے پیغام میں ڈائریکٹر جنرل شفقت جلیل کا کہنا تھا کہ مرحوم کی ریڈیو پاکستان کے لئے دی گئی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں وہ موسیقی کے حوالے سے نمایاں مقام کے حامل تھے اور انکی فنی خدمات ریڈیو پاکستان کا اثاثہ ہیں ۔

shahwar haide3

اسٹیشن ڈائریکٹر قومی ورثہ ریڈیو پاکستان لاہور نزاکت شکیلہ کا مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ان کی رفاقت میں طویل عرصہ گزرا ہے وہ اپنے فن میں یکتا تھے اور موسیقی کے شعبے کے لئے دی گئی انکی خدمات کو بھلایا نہیں جاسکتا ،ریڈیو پاکستان لاہور مرکز کے ورکرزاس دکھ کی گھڑی میں ان کے خاندان کے ساتھ برابر کے شریک ہیں ۔

پاکستان براڈکاسٹنگ اکیڈمی میں سید شہوار حیدر کے استاد معروف شاعر ادیب اور ماہر نشریات صفدر ھمدانی نے اس نقصان پر اظہار غم کرتے ہوئے کہا کہ چند روز پہلے ہی لاہور میں جب شہوار سے ملاقات ہوئی تو وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ وہ اتنی جلدی راہی ملک عدم ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اسوقت ریڈیو پاکستان میں نہایت قلیل تعداد میں جو پیشہ ور پروگرامر موجود ہیں شہوار ان میں سے ایک تھے اور سب سے بڑی بات کہ انسان بہت نفیس تھے

ریڈیو پاکستان کے مختلف مراکز پر شہوار حیدر کے دوستوں ،ہم عصروں اور شرکائے کار نے بھی نشریاتی دنیا کے اس بڑے نقصان پر اظہار افسوس کیا ہے اور مرحوم کی مغفرت کی دعا کی ہے

کاشف غوری
قومی ورثہ ریڈیو پاکستان لاہور

SHARE

1 COMMENT

  1. Yes. Very sad. Syed Shahwar Haider was one of the notable officers at Radio Pakistan, Lahore. May Almighty Allah keep his soul in comfort and peace. Ameen. THanks to Safdar Hamadani for providing coverage on Online Akhbaar. Regards. Khalid Asghar, former Controller- Station Director, Radio Pakistan, Lahore.

LEAVE A REPLY