شامی صوبہ ادلب میں ملکی فوج کی بمباری کے سبب تیس ہزار سے زائد شہری بے گھر ہو چکے ہیں۔ یہ بات اقوام کے حکام نے خبر رساں ادارے روئٹرز کو آج پیر کے روز بتائی۔ شامی فورسز اور اس کے اتحادیوں کی طرف سے باغیوں کے زیر قبضہ صوبہ ادلب میں ان کارروائیوں کا آغاز گزشتہ ہفتے ہوا تھا۔ مہاجرین کے حوالے سے اقوام متحدہ کے دفتر کے ترجمان ڈیوڈ سوانسن کے مطابق نو ستمبر تک تیس ہزار پانچ سو شامی شہری بے گھر ہوئے جو اپنی جان بچانے کے لیے صوبہ ادلب کے دیگر حصوں کی طرف گئے۔

SHARE

LEAVE A REPLY