سابق صدر پرویز مشرف، ڈان لیکس رپورٹ منظرعام پر لانے کا مطالبہ

0
224

لندن۔ سید کوثر کاظمی ۔آ ل پاکستان مسلم لیگ کے سربراہ اور سابق صدر پرویز مشرف نے لندن کے ایک نجی ہوٹل میں پارٹی کے اراکین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آل پاکستان مسلم لیگ ڈان لیکس رپورٹ منظرعام پر لانے کا مطالبہ کرتی ہے۔ پرویز مشرف کا کہنا ہے قومی سلامتی کے امور پر کسی قسم کا سمجھوتہ قابل قبول نہیں۔

اپنے ایک بیان میں سابق صدر نے حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سوال اٹھایا کہ اجلاس میں موجود لوگوں میں سے کس نے خبر لیک کی۔ قوم کو بتایا جائے خبر لیک کرنے والے اصل کردار کے خلاف کیا کارروائی کی گئی؟

پرویز مشرف کا کہنا تھا کہ چھوٹی قربانی دیکر اصل کردار کو بچایا جارہا ہے۔ قومی سلامتی کو داؤ پر لگانے والے ملک و قوم سے مخلص نہیں ہوسکت ملکی معیشت کی بری حالت کی وجہ خراب گورنس ہے  کرپشن نے ملکی معیشت اور اقتدار کی باریاں لینے والوں نے ملک کو تباہ کر دیا ہےاور ابھرتا پاکستان اب پستی کی جانب جا رہا ہے ، میں نے پاکستان کو مستحکم کیا اور پاکستانیوں کا رتبہ بلند کیا تھا آج پاکستانی ملک سے بھاگنے کی باتیں کر رہے ہیں

پرویز مشرف نے کہا کہ عوام کو پینے کا پانی،خوراک۔صحت کا برا حال ہے،بے روزگاری میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔بیرونی سرمایہ کار پاکستان آنے کو تیار نہیں ،پاکستانی سرمایہ کار پریشانی میں مبتلا ہے اندرونی خطرات کے ساتھ بیرونی خطرات کا بھی سنگین خطرات کا سامنا ہے ،بھارت میں انتہا پسند شخص وزیراعظم بن چکا ہے جس سے خیر کی توقع نہیں، بھارت اس بات کو مان چکا کہ نان ملٹی سلوشن سے حل نہیں سکتا اوربھارت فوج کو کمزور کرنے کی سازشوں میں مصروف ہے،جب بھارت کا مقصد پاکستان کو نیچا دکھانا ہے تو اس کے ساتھ دوستی کی باتیں کیوں کریں

انکا کہنا تھا کہ  سپریم کورٹ قومی حکومت کا حکم دے سکتی ہے ، آگرسپریم کورٹ ایسا نہیں کرتی تو موجودہ صورتحال کا حل صرف سیاسی ہے، نااہل اور کرپٹ آدمی حکمران ہیں ، آنے والے الیکشن میں ن لوگ پھر پنجاب پر قابض نظر آرہی ہے، پاکستان میں اس وقت تبدیلی لانے کی ضرورت ہے اور تبدیلی کے لیے ملک بچانے کا مقصد اپنے ذہن میں رکھنا ہوگا، نیا پاکستان اور خطرات کا سامنا کرنے ایک سیاسی فورم کی ضرورت ہے جو ان کرپٹ حکمرانوں کے سامنے کھڑا ہو سکے ،اپنی ذہنی سوچ کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے، عوام تبدیلی چاہتی ہے وہ رو رہی ہے صرف ایسےلیڈر کی ضرورت جو ان کے حقوق کی آواز اٹھائے،حکمران پیسوں کے ساتھ حکومتی نظام کو استعمال کر کے اقتدار حاصل کرتے ہیں

انہوں نے کہا کہ اس وقت تیسری سیاسی فورم بننے کے لیے ماحول بنا ہوا ہے ، پاکستانی سیاسی جماعتیں صرف صوبوں تک محدود ہوچکی اس وقت پاکستانیت کو فروغ دینا ہوگا، ایسی سیاسی طاقت ہو جو پاکستان کی نمائیندگی کرے

اس سے قبل آل پاکستان مسلم لیگ نے ڈان لیکس رپورٹ منظرعام پر لانے کا مطالبہ کردیا۔ پرویز مشرف کا کہنا ہے قومی سلامتی کے امور پر کسی قسم کا سمجھوتہ قابل قبول نہیں۔

اپنے ایک بیان میں سابق صدر نے حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سوال اٹھایا کہ اجلاس میں موجود لوگوں میں سے کس نے خبر لیک کی۔ قوم کو بتایا جائے خبر لیک کرنے والے اصل کردار کے خلاف کیا کارروائی کی گئی؟

پرویز مشرف کا کہنا تھا کہ چھوٹی قربانی دیکر اصل کردار کو بچایا جارہا ہے۔ قومی سلامتی کو داؤ پر لگانے والے ملک و قوم سے مخلص نہیں ہوسکتے

وڈیو دیکھنے کے لیئے یہاں کلک کیجئے

SHARE

LEAVE A REPLY