سینٹ نے صادق سنجرانی کو چیرمین منتخب کر لیا انکو103کے ایوان میں 57 ووٹ ملے

0
111

پاکستان کی سینٹ کے ایم ترین انتخاب میں سادق سنجرانی 57 ووت لیکر سینٹ کے چیرمین منتخب ہو گئے جبکہ ن لیگ کے راجہ ظفر الحق کو چھیالیس ووٹ ملے
سینٹ کا اجلاس پریزائڈنگ افسر سردار یعقوب ناصر کی صدارت میں ہوا
پہلا ووٹ حافظ عبدالکریم نے کاسٹ کیا
صادق سنجرانی نے حلف اٹھا لیا جس کے بعد سینٹ کے ڈپٹی چیرمین کا انتخاب شروع ہوا
اس سے پہلے کی یہ خبر تھی
صادق سنجرانی چیئرمین اور سلیم مانڈوی والا ڈپٹی چیئرمین کیلئے پیپلز پارٹی ، تحریک انصاف اور بلو چستان کے آزاد ارکان کے مشترکہ امیدوار جبکہ مسلم لیگ ن کی جانب سے چئرمین کے لئے راجہ ظفر الحق اور ڈپٹی چیئرمین کے لئے عثمان کاکڑ میدان میں ہیں۔ دونوں پینل میں کانٹے کا مقابلہ متوقع ہے۔
سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کی زیر صدارت مسلم لیگ ن کا مشاورتی اجلاس ہوا جس میں پرویز رشید، امیر مقام، مشاہد حسین، گورنر سندھ محمد زبیر، وزیر نجکاری دانیال عزیز اور راجا ظفرالحق شریک ہوئے۔ اجلاس میں چیئرمین سینٹ کے لئے راجا ظفر الحق اور ڈپٹی چیئرمین کے لئے عثمان کاکڑ کے ناموں کو فائنل کیا گیا۔
سینیٹ کے کل ارکان 104 ہیں لیکن اسحاق ڈار کی غیر حاضری کی وجہ سے تعداد ایک سو تین ہے ، چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین بننے کیلئے 53 ووٹ درکار ہیں ، اس وقت سینیٹ میں مسلم لیگ (ن) کے سینیٹرز کی تعداد 33 ہے جن میں سے اسحاق ڈار بیرون ملک ہونے کے باعث ووٹ کا سٹ نہیں کر سکیں گے ، اس کے علاوہ پختونخوا ملی عوامی پارٹی 5 ، نیشنل پارٹی 5 ، جے یو آئی (ف) 4 ، مسلم لیگ فنکشنل ، اے این پی ، بی این پی مینگل کے ایک ایک ارکان کی حمایت بھی اسے حاصل ہے جن کی کل تعداد 50 بنتی ہے ۔ جماعت اسلامی نے بھی ن لیگ کی حمایت کا اعلان کیا ہے جن کے پاس سینیٹرز کی تعداد 2 ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY