لوٹن میں سید حسین شہید سرور کا چوہدری غالب اور سردارشہزاد کے اعزاز میں استقبالیہ

0
218

ممتازسیاسی و سماجی شخصیت سید حسین شہید سرور نے گذشتہ روز آزاد کشمیر سے برطانیہ کے دورے پر آئے ہوئے ممتازسیاسی رہنماء چوہدری محمد غالب اور ایس ایچ او کوٹلی سردار شہزاد سرور کے اعزاز میں استقبالیہ دیا۔

اس موقع پر پروفیسر مسعود اختر ہزاروی، سابق میئرلوٹن کونسلر ریاض بٹ،
مسلم لیگی رہنما سردار نفیس سرور، نثارچوہدری، سید عابد گیلانی، سید صفدر حسین بخاری، شہزاد علی چوہدری، احتشام قریشی، سردار سعید مشتاق، مصطفی غالب، سید شاہد حسین سید اور دیگربھی موجود تھے۔

اس دوران مسئلہ کشمیر پر سیرحاصل گفتگو ہوئی اور مقبوضہ کشمیرکے مظلوم عوام کے ساتھ یکجہتی کا اظہارکیا گیا۔

سید حسین شہید سرور نے کہاکہ کشمیر میں اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں فوری طور پر رائے شماری کرائی جائے۔ خطے میں امن و سلامتی کے قیام کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل ضروری ہے۔ بھارت پر دباو ڈالا جائے تاکہ وہ کشمیریوں کو ان کا حق خودارادیت دے۔ انھوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ کشمیریوں پر مظالم ڈھانے والی بھارتی قابض فوج کو کشمیر سے نکالا جائے، مقبوضہ کشمیرمیں کالے قوانین ختم کئے جائیں اور کشمیریوں کو اپنے سیاسی مستقبل کا فیصلہ کرنے کا حق دیا جائے۔ سید حسین شہید نے کہاکہ مقبوضہ کشمیرکے لوگوں کے دکھ درد میں آزاد کشمیرکے عوام اور باہر رہنے والے کشمیری ان کے ساتھ شریک ہیں۔ کشمیریوں کی جدوجہد عالمی اصولوں کے مطابق ہے اور ایک دن انہیں ضرور کامیابی نصیب ہوگی۔

انھوں نے اس عزم کا بھی اظہارکیا کہ 18اپریل کو بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی کی برطانیہ آمد کے موقع پر مقبوضہ کشمیرمیں انسانیت سوز بھارتی مظالم کے خلاف لندن میں بھرپور مظاہرہ کیا جائے گا۔

انھوں نے کہاکہ کشمیری اور پاکستانی کمیونٹی سے ہماری پر زور اپیل ہے کہ 18اپریل 2018ء کو دن بارہ بجے تمام تر مصروفیات ترک کرکے لندن پہنچیں اور بھارت کیخلاف احتجاجی مظاہرے میں شرکت کرکے اسے تاریخی بنانے میں کردار ادا کریں اس سے بھارت کا مکروہ اور ظالمانہ چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب ہوگا اور مقبوضہ کشمیر کی غیور و مظلوم عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی ہو گی۔

تقریب کے اختتامی مرحلے میں حضرت امام علی علیہ السلام کی ولادت (تیرہ رجب المرجب) کی مناسبت سے ان کی حیات مبارکہ خصوصاً ان کے فضائل پر بھی روشنی ڈالی گئی۔ اس بارے میں سید عابد گیلانی نے گفتگو کی اور دعا بھی کرائی۔

SHARE

LEAVE A REPLY