ریڈیو پاکستان نے لاہور کے تاریخی ریڈیو اسٹیشن کا ایک اہم اسٹوڈیو اولیں ناشر اعلان قیام پاکستان مصطفیٰ علی ھمٰدانی کے نام سے موسوم کر دیا

0
594
احمد ترازی۔ بیورو چیف عالمی اخبار۔ پاکستان۔۔۔۔تصاویر۔ نزاکت شکیلہ

ریڈیو پاکستان نے لاہور کے تاریخی ریڈیو اسٹیشن کا ایک اہم اسٹوڈیو اولیں ناشر اعلان قیام پاکستان مصطفیٰ علی ھمٰدانی کے نام سے موسوم کر دیا ہے

لاہور ریڈیو اسٹیشن پر تیرہ اگست کی رات ہونے والی ایک خصوصی تقریب میں ریڈیو پاکستان کی سربراہ ڈائریکٹر جنرل ثمینہ پرویز نے اسٹوڈیو بی ون کے باہر لگی ہوئی تختی کی نقاب کشائی کی اور ریڈیو پاکستان کے اس اولیں باب کو خراج تحسین پیش کیا۔ یاد رہے کہ پاکستان  کے قیام کا پہلا اعلان تیرہ اور چودہ اگست انیس سو سنتالیس کی درمیانی رات بارہ بجے لاہور ریڈیو سے مصطفیٰ علی ھمٰدانی نے ہی کیا تھا اور یہ اعزاز قومی ادارے کے طور پر ریڈیو پاکستان کے حصے میں آیا تھا

انیس سو سنتالیس کے بعد یہ پہلی مرتبہ ہے کہ قومی ادارے ریڈیو پاکستان نے 66سال بعد اس قومی نشریاتی ہیرو کی خدمات کو تسلیم کیا ہے اور اسکا اعزاز ریڈیو پاکستان کی موجودہ سربراہ ڈائریکٹر جنرل ثمینہ پرویز کو جاتا ہے جنہوں نے اس ضمن میں فیصلہ کرنے اور اسے عملی جامہ پہنانے میں خصوصی دلچسپی لی


اس خصوصی تقریب میں دیگر مہمانوں کے علاوہ ادیب اور شاعر عطا الحق قاسمی، لاہور ریڈیو کے اسٹیشن ڈائریکٹر سید رضا کاظمی اور لاہور ریڈیو پر ایف ایم 101 کی سربراہ ڈپٹی کنٹرولر نزاکت شکیلہ بھی موجود تھیں

 


مصطفیٰ علی ھمدانی مرحوم کے فرزند معروف شاعر،ادیب،براڈکاسٹر اور عالمی اخبار کے مدیر اعلیٰ صفدر ھمدانی اور مصطفیٰ علی ھمٰدانی کی بہو معروف نیوز کاسٹر اور بی بی سی کی پروڈیوسر ماہ پارہ صفدر نے اس پر خوشی کا اظہار کیا ہے اور ڈائریکٹر جنرل ثمینہ پرویز کا شکریہ ادا کیا ہے جنکی ذاتی دلچسپی کی وجہ سے چھیاسٹھ سال بعد پہلی مرتبہ مرحوم مصطفیٰ علی ھمٰدانی کی تاریخی خدمات کو تسلیم کرتے ہوئے لاہور ریڈیو ایک اسٹوڈیو انکے نام سے منسوب کیا گیا ہے

اس قبل لاہور ریڈیو کی ایک اور مقبول اور ابدی آواز موہنی حمید کے نام سے بھی لاہور ریڈیو کا ایک اسٹوڈیو موسوم کیا گیا تھا۔ موہنی حمید بچوں کے پروگرام اور ڈرامے کی لافانی صداکارہ رہی ہیں

SHARE

LEAVE A REPLY