سال نو کے سورج کے طلوع کا مرحلہ آخری مراحل میں

0
118

دنیا بھر میں نئے سال کے آغاز کے موقع پر رنگا رنگ تقریبات کا آغاز ہوا۔ ہانگ کانگ اور آسٹریلیا میں زبردست اور دل فریب آتش بازی کے ساتھ نئے سال کو خوش آمدید کہا گیا۔ دبئی میں بھی نئے سال کے آغاز پر ایل ای ڈی روشنیوں کا ایک شو منعقد ہوا۔ جرمنی میں نئے برس کی تقریبات کے موقع پر سکیورٹی کے کڑے انتظامات کیے گئے تھے۔

ایک سال قبل برلن کی ایک کرسمس مارکیٹ پر حملے اور دو سال قبل کولون میں نئے سال کے موقع پر خواتین پر جنسی حملوں کے تناظر میں مختلف شہروں میں پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی۔ امریکا میں نئے سال کی آمد پر مختلف شہروں میں زبردست آتش بازی کی گئی

سال نو کا جشن آکلینڈ سے شروع ہوکر اپنی آخری منزل نیویارک پہنچ گیا جہاں ٹائمز اسکوائر پر ہزاروں افراد نے سخت سردی میں 2018کو خوش آمدید کہا۔

نیو یارک کے ٹائمز اسکوائر پر نئے سال کا جشن منانے کے لئے 12 ہزار پونڈ وزنی رنگ برنگی روشنیوں سے سجی گیند کو 130 فٹ اونچے کھمبے پر پہنچا یا گیا جہاں 12 بجتے ہی گیند کو روشن کر دیا گیا، ٹھنڈے ٹھار موسم میں اس نظارے کو دیکھنے کے لئے نیویارک میں 10 لاکھ سے زائد افراد موقع پر موجود تھے۔

سال نو کا جشن نیوزی لینڈ کے شہر آکلینڈ کے اسکائی ٹائور سے شروع ہوا جس کے بعد سڈنی کے ہاربر برج اور جاپان کے ٹوکیو پارک میں شاندار آتش بازی ہوئی ، آسمان جگمگا اٹھا ،منچلوں کا شور شرابا عروج پر رہا ۔

نئے سال کی مبارک بادوں کا سلسلہ آکلینڈ سے ہوتے ہوئے ہانگ کانگ تک پہنچ گیا، اس موقع پر ہر شہر کا آسمان رنگ و نور سے بھر گیا ،شہریوں نے نئے سال کی آمد پر نئے عہد و پیماں باندھے۔

چین کے شہر ہانگ کانگ میں بھی نئے سال کا استقبال آتشبازی کے شاندار مظاہرے سے کیا گیا،ہانگ کانگ کے وکٹوریا ہاربر پر آتشبازی کے مظاہرے سے پورا آسمان جگمگا اٹھا۔

دبئی کے برج خلیفہ پر بھی نئے سال کے جشن شایان شان طریقے سے منایا گیا۔ برج خلیفہ پر موجودہزاروں سیاح اور مقامی افراد نے آتش بازی کا مظاہرہ دیکھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY